نعت پاک : مشتاق ہاشمی ۔ کولکاتا، انڈی

رسالت کی ضیا پھیلی ہوئی معلوم ہوتی ہے
نظام دہر میں جو دلکشی معلوم ہوتی ہے

یہ صدقہ ہے محمد مصطفےٰ کے پائے اطہر کا
کہ دنیا رنگ و نکہت سے رچی معلوم ہوتی ہے

ہر اک جانب ضیا باری ہے جو نور رسالت کی
“سرِ فاراں ابھی تک روشنی معلوم ہوتی ہے”

یہاں دیکھو وہاں دیکھو جدھر دیکھو جہاں دیکھو
ردا باران رحمت کی تنی معلوم ہوتی ہے

یقیناًآمد فخر رسالت کی ہے یہ برکت
ابھی تک دہر میں تابندگی معلوم ہوتی ہے