حمد پاک : علیم صبا نویدی، چنئی،انڈیا



تو ہر ایک سمت ہے جلوہ گر، تری شان جلّ جلالہٗ
تو نفس نفس، تو نظر نظر، تری شان جلّ جلالہٗ

جو جہانِ غیب و شہود ہیں، ترے آگے سر بسجود ہیں
ترے ذکر میں ہے ہر اک شجر،تری شان جلّ جلالہٗ

تو ہر ایک دل کا مجیب ہے، تو ہر اک نظر کا حسیب ہے
تجھے پھر بھی ڈھونڈے ہے ہربشر، تری شان جلّ جلالہٗ

تو ہر ایک شے سے عیاں بھی ہے، تو ہر ایک شے میں نہاں بھی ہے
تجھے دیکھ سکتی ہے کب نظر،تری شان جلّ جلالہٗ

ترے ہاتھ موت و حیات ہے، ترے بس میں قید و نجات ہے
تجھے ذرّے ذرّے کی ہے خبر،تری شان جلّ جلالہٗ

تری رحمتوں سے بھری ہوئی، تری برکتوں سے لدی ہوئی
مری منزلیں، مری رہ گزر، تری شان جلّ جلالہٗ

تجھے بھول جائوں میں کس طرح، تجھے یاد رکھوں میں کس طرح
ہے لہو میں جب کہ ترا سفر، تری شان جلّ جلالہٗ

ذرا دیکھ شہر سخن میں اب، تری لکھ کے حمد و ثنا عجب
یہ نویدی فن کا ہے تاج ور ، تری شان جلّ جلالہٗ


یہ حمد پاک آپ کو کیسی لگی؟ اسے کتنے ستارے دینا چاہیں گے؟