حمد پاک : میاں محمد اعظم، راولپنڈی، پاکستان



ذرے ذرے میں سمایا سب خدا کا نور ہے
عالمِ ہستی پہ چھایا سب خدا کا نور ہے

کوچہ کوچہ قریہ قریہ سب خدا کا نور ہے
میں جہاں تک دیکھ پایا سب خدا کا نور ہے

پھول صحرا میں کھلا مسحور عالم ہو گیا
جو گلوں پر رنگ آیا سب خدا کا نور ہے

قوتِ گویائی اس نے ہی عطا کی خاک کو
جو کسی نے کچھ سنایا سب خدا کا نور ہے

ہے نبی کا نور جو بھی وہ خدا کا نور ہے
کفر ہے جس نے مٹایا سب خدا کا نور ہے

جس نے آدم کو فرشتوں کی جماعت سے میاں
ایک سجدہ تھا کرایا سب خدا کا نور ہے

یہ حمد پاک آپ کو کیسی لگی؟ اسے کتنے ستارے دینا چاہیں گے؟